Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: ڈاکٹر کے ساتھ 42لاکھ کی دھوکا دہی معاملہ میں حیدرآباد سے 2گرفتار

اورنگ آباد:اورنگ آباد پولس کی معاشی جرائم ونگ (EOW)نے ایک سال پرانے ایک دھوکا دہی کے معاملے میں حیدرآباد سے 2لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ ان ملزمین نے اورنگ آباد کے ایک ڈاکٹر کو ایک سال قبل خراب کیتھ لیب کی مشین فروخت کی تھی اور اس معاملہ میں ایم آئی ڈی سی والوج میں مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

یہ گرفتاری اس وقت عمل میں آئی جب چند ماہ قبل ان ملزمین کی ضمانت کی درخواست کو سیشن کورٹ نے خارج کردی تھی۔ ملزمین کی پہچان چیپلی ناگیش بابو اور انکے ملازم دانم چیتنیا کرشنا کی گئی ہے۔ جمعہ کو عدالت میں پیشی کے بعد ان دونوں ملزمین کو 3دن کے لئے پولس کسٹڈی میں روانہ کردیا گیا ہے۔

EOWکے پولس سب انسپکٹر اجئے سوریاونشی نے بتایا کہ شکایت کردہ 39سالہ راہل جاولے نے والوج علاقہ میں ایک اسپتال اور ریسرچ سینٹر شروع کیا تھا۔ اسپتال قائم کرتے وقت راہل کو پتا چلا کہ نئی کیتھ لیب مشین کی قیمت 1.25کروڑ روپئے سے زائد ہے تو انہوں نے استعمال شدہ مشین خریدنے کا ارادہ کیا۔ اس کے بعد ڈاکٹر راہل کا ناگیش سے نومبر2017 میں رابطہ ہوا جو کہ XGEمیڈیکل سسٹم کا ڈائریکٹر تھا۔

کمپنی نے ڈاکٹر کو استعمال شدہ مشین کی قیمت 42لاکھ بتائی جس کے بعد سودہ ہوا اور کمپنی کے تکنیکی ماہر دانم اپنے دو انجینئروں کے ساتھ اورنگ آباد پہنچا اور مشین لگائی۔ مشین کے ا ستعمال کے دوران جب بار بار اس میں خرابی آئی تو ڈاکٹر راہل نے کمپنی کو شکایت کی لیکن متعدد بار شکایت کرنے کے بعد بھی کمپنی نے مسئلہ کا حل نہیں نکالا جس کے بعد مجبور ہوکر ڈاکٹر نے نومبر 2018میں پولس میں شکایت درج کرائی۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!