Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: مختلف ممبران اسمبلی نے بی جے پی کے پر شانت بمب کی کی شکایت

اورنگ آباد:- سیاست میں مختلف معاملات دیکھنے میں آتے ہیں جس میں پارٹیاں ایک دوسرے پر سوالات اٹھاتی ہے لیکن ایک عجیب معاملہ میں مختلف ممبران اسمبلی نے حکمراں پارٹی کے رکن اسمبلی کے خلاف شکایتیں درج کروائی۔

فلحال جاری اسمبلی کے اجلاس کے موقع سے تقریباً ایک درجن سے زائد ممبران اسمبلی نے وزیر اعلیٰ دیویندر فرنویس سے ملاقات کر اورنگ آباد ضلع کے گنگا پور سے بی جے پی کے ایم ایل اے پرشانت بھوشن کے خلاف شکایت درج کروائی۔ شکایت کرنے والے ممبران اسمبلی میں سے چند کا تعلق حکمراں پارٹی بی جے پی، شیو سینا سے بھی ہے اور چند کا تعلق حزب اختلاف کانگریس سے بھی۔ پرشانت پر ان ممبران اسمبلی نے منظم طریقہ سے بلیک میلنگ کرنے کا الزام لگایا ہے۔

شکایت کرنے والے ممبران اسمبلی میں کانگریس کے عبدالستار, BJP کے موہن پھاڑ اور تاناجی متکولے اور شیو سینا و این سی پی سے چند کا نام شامل ہے۔

قابل غور بات یہ ہیکہ یہ کل جماعتی ممبران اسمبلی کے وفد کا تعلق مراٹھواڑہ کے مختلف اضلاع سے ہے کی عام شکایت ہیکہ پرشانت پوری ریاست کا دورہ کر سرکاری افسران اور گتہ داروں سے ڈرا دھمکا رہے ہیں۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے عبدالستار نے کہا کہ پرشانت نے سبکدوش سرکاری افسران کی ٹیم تیار کی ہے اور انکے ذریعہ RTI کی درخواستیں ڈال کر سرکاری کاموں کی معلومات نکالتے ہیں جس میں خاص طور سے سڑکوں کی تعمیر شامل ہے۔ اور اسکے ذریعہ گتہ داروں اور سرکاری افسروں کو جعلی بل و خراب کام کے عنوان سے ڈراتے ہیں۔

عبدالستار نے کہا کہ “ہم نے تو صرف اس شکایت کے مرحلہ میں حکمراں پارٹی بی جے پی اور شیو سینا کے ممبران اسمبلی کی ہمدردی میں انکا ساتھ دیا ہے جنکے خلاف پرشانت بمب نے نام نہاد کرپشن مخالف مہم شروع کر رکھی ہے جو کہ اصل میں بلیک میلنگ کا عمل ہے”۔

ممبران اسمبلی نے بتایا کہ پرشانت جس انداز میں جس انداز میں وہ گتہ داروں اور افسروں کو دھمکی دیتے ہیں اس سے ترقی کے کاموں میں رکاوٹ آئے گی اور آگے سے کوئی بھی کام کرنے کو ڈریگا۔

شکایت کی اس بات پر وزیر اعلیٰ کے دفتر نے خاموشی اختیار کی ہے اور کچھ تو شکایت کے واقعہ کا انکار بھی کر رہے ہیں لیکن پرشانت بمب نے خود ٹائمس آف انڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ممبران اسمبلی نے انکے خلاف گروہ بندی کرلی ہے اور وزیر اعلیٰ سے مل کر انکے کرپشن مخالف مہم کی شکایت کی ہے۔ پرشانت بمب نے دعوی کہا کہ “ ہاں میں سرکاری کاموں میں کرپشن تلاش کر رہا ہوں اور اسکے حل کی بھی کوشش میں لگا ہوں۔ میری اس مہم کی وجہ سے میں نے کم از کم عوام کے 700 کروڑ روپئے بچائے ہیں جو کہ خراب طریقہ کی وجہ سے ضائع ہوسکتے تھے”۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!