Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: ماں نے اپنے دس ماہ کے بچہ کو مار دیا، پولس نے کیا گرفتار

پولس کے مطابق اس عورت کو اولاد کے طور پر چاہیے تھی لڑکی

اورنگ آباد:۔ پولس نے آج ایک خاتون کو اپنے ہی دس سالہ بچے کا قتل کرنے کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے۔ بچے کی لاش پولس کو گھر کے باہر ایک پانی سے بھرے ڈرم میں پائی گئی۔

ایک سینئر پولس افسر کے مطابق عام طور پر لوگ لڑکی کے پیدا ہونے پر اسکا قتل کردیتے ہیں لیکن اس خاتون نے اپنے لڑکے کو اس لئے قتل کیا کیوں کہ اسے لڑکی چاہیے تھی۔

مزید تفصیلات کے مطابق اورنگ آباد کے پیٹھن تعلقہ کے پیٹھن کھیڑا گاؤں سے ایک بچہ جسکا نام پریم پرمیشور ایرانڈے لاپتہ بتایا گیا تھا۔ملزم خاتون ویدیکا ایرانڈے نے بڑکن پولس اسٹیشن میں اپنے بیٹے کے گمشدہ ہونے کی شکایت درج کروائی تھی۔ اس نے اپنی شکایت میں لکھوایا تھا کہ اسے لگتا ہے اس کے بچے کا اغواء ہوا ہے۔

معاون انسپیکٹر پنڈت سونوانے کے مطابق’’ شکایت کے درج ہونے کے چند گھنٹے بعد ہی پولس نے تفتیش شروع کی اور انہیں ویدیکا کے گھر میں ہی پانی سے بھرے ڈرم میں بچہ کی لاش ملی۔ چونکہ بچہ کی موت مشکوک لگ رہی تھی تو اس پر ہم نے ویدیکا اور اس کے رشتہ داروں سے پوچھ تاچھ کی ۔ ملزمہ کے جوابات ہم کو مناسب نہیں لگے‘‘۔

سونوانے نے مزید کہا کہ ’’ پوچھ تاچھ کے دوران پتہ چلا کہ ویدیکا نے خود اپنے 10؍ سالہ بچہ کا قتل کیا تھا۔اس نے پولس سے بتایا کہ اسے پہلے ہی سے ایک لڑکا تھااور جب وہ حمل سے تھی تو اسے لڑکی ہونے کی امید تھی لیکن اسے دوسرا بھی لڑکا ہواجس کی وجہ سے اس نے یہ جرم کیا۔‘‘
خاتون پر دفع 302کے تحت کیس درج کیا گیا ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!