Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: فساد کے ویڈیو میں پولس نے لگائے فرقہ وارانہ نعرہ

اورنگ آباد:۔ شہر میں ہوئے فساد اور اس کے بعد پولس جانچ شروع ہونے کے 10دن بعد ایک اور ویڈیو کلپ سامنے آیا ہے جس میں پولس والے خود فرقہ وارانہ نعرہ لگاتے ہوئے پائے گئے ہیں۔حالانکہ ابھی تک اس ویڈیو کی تصدیق نہیں ہوئی ہے۔
واضح ہوکہ اس فساد میں ایک 17سالہ نوجوان اور ایک بزرگ کی موت واقع ہوئی تھی اور تقریباً 60لوگ زخمی ہوئے تھے۔
جو نئی ویڈیو سامنے آئی ہے اسے نواب پورہ کے کسی گھر سے لیا گیا تھا۔اس ویڈیو میں پولس والے فائرنگ کرتے ہوئے اور مقامی رہنے والوں پر فرقہ وارنہ طعنے کس رہے تھے اور اپنے گھروں سے نکلنے کی دھمکی دے رہے تھے۔ جب اس ویڈیو سے متعلق پوچھا گیا تو SITچیف اور نائب پولس کمشنر دیپالی گھاڈگے نے کہا کہ ہم اس ویڈیو کی جانچ کررہے ہیں اور ملزم جلد ہی پہنچان لیے جائنیگے۔ ایک سینئر پولس افسر نے کہا کہ ’’ یہ انتہائی افسوسناک ہیکہ پولس والے فرقہ وارانہ نعرہ لگارہے تھے اور فسادیوں کی مدد کررہے تھے۔ چاہے شکایت آئے یا نہ آئے ہم کاروائی ضرور کرینگے۔ محلہ کے رہنے والوں نے کہا کہ پولس والوں نے کئی گولیاں چلائیں تھیں۔ لوگوں نے اپنی جان کے ڈر سے گھر سے نہ نکلے اور اپنی آنکھوں کے سامنے گاڑیوں کو جلتے دیکھتے رہے۔
اس سے قبل بھی ایک ویڈیو میں پولس والوں کو فسادیوں کا ساتھ دیتے دکھایا تھا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!