Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: سینٹرل ناکہ پر کچرا پروسیسنگ کی شروعات ابھی تک نہیں ہوئی

اورنگ آباد: ایک جانب جہاں شہر کی انتظامیہ کچرا کا مسئلہ کو قابو میں کرنے کی کوشش میں لگی ہوئی ہے۔تو دوسری جانب ان کے اس دعویٰ میں غلط دعوے سامنے آرہے ہیں جس سے شہریان کو مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

ٹائمز آف انڈیا کی خبر کے مطابق اورنگ آباد میونسپل کارپوریشن نے دعویٰ کیا تھا کہ سینٹرل ناکہ پر کچرا اکھٹا کرناشروع کردیا ہے تاکہ اس جگہ کو ماحولیاتی پارک میں تبدیل کرلیں، لیکن دو مہینوں کے بعد بھی یہ دعویٰ غلط اور گمراہ کن لگتا ہے۔ کچرے کا ٹیلا آج بھی وہاں موجود ہے اور پروسسنگ شروع نہیں ہوئی ہے۔ میونسپل انتظامیہ کی جانب سے لاپرواہی کی حد یہ ہے کہ اس سے نہ صرف ساکنان کی صحت کو خطرہ لاحق ہورہا ہے بلکہ اس میدان میں سوکھے کچرے کو الگ کرنے کا کام بھی نہیں کیا گیا ہے۔

میونسپل انتظامیہ نے مارچ سے جولائی کے درمیان سینٹرل ناکہ میدان میں 4000میٹرک ٹن کچرا ڈال چکی ہے۔ میونسپل انتظامیہ نے وہاں پر ابھی کچرا ڈالنا بند کردیا ہے اور ایم جی ایم سے اس مسئلہ کو حل کرنے میں مشاورت کررہی ہے۔ منصوبہ کے مطابق اس جگہ کو ماحولیاتی پارک بنانا ہے۔ ایم جی ایم سے پروجیکٹ ذمہ دار آر آر دیشپانڈے نے کہا کہ انہوں نے میونسپل انتظامیہ کے افسران سے کچرے کی تقسیم کرنے کو کہا ہے۔ ہم نے فی الحال اس کچرے کی بدبو ختم کی اور اس کچرے سے کھاد تیار کررہے ہیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!