Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: سابق شیو سینا MP پولس اسٹیشن پر توڑ پھوڑ کے الزام میں گرفتار

مسلم ممبران اسمبلی وزیر اعلیٰ سے مل کر فساد میں ملوث شیو سینا لیڈران اور پولس والوں کے خلاف سخت کاروائی کا کرینگے مطالبہ

اورنگ آباد:۔ سابق شیو سینا MP پردیپ جیسوال کو کل رات کرانتی چوک پولس اسٹیشن میں تباہی مچانے اور فساد کے الزام میں گرفتار شیو سینا ممبران کی رہائی کے مطالبہ کے لیے مجموعہ کو لیکر ہنگامہ کرنے کے الزام میں آج گرفتار کر کیا گیا ہے۔
جیسوال سابق میں 1996-98 کے درمیان شہر کے ممبر آف پارلیمنٹ رہ چکے ہیں ساتھ ہی سابق میں وہ شہر کی کارپوریشن کے میئر اور ریاستی اسمبلی کے رکن بھی رہے ہیں۔
پولس کے مطابق شہر میں ہوئے حالیہ فساد کے بعد سے بہت سے لوگوں کو اس جرم کے تحت گرفتار کیا گیا تھا۔ گرفتار شدہ لوگوں میں سے چند کا تعلق گاندھی نگر سے ہے جو کرانتی چوک پولس تھانہ کے تحت آتا ہے۔
دیگر تفصیلات کے مطابق ان گرفتاریوں کے بعد جیسوال نے کل رات 11 بجے کے قریب ایک مجموعہ کو لے کر پولس اسٹیشن پہنچا اور گرفتار شدہ کی رہائی کا مطالبہ کرنے لگے۔
جب پولس نے انکار کیا تو مجموعہ نے پولس تھانہ میں توڑ پھوڑ کی۔
اس واقعہ کے بعد جیسوال کے خلاف پولس نے سیکشن 353 (سرکاری ملازم کے کام میں رکاوٹ پیدا کرنا)، سیکشن 332( جان بوجھ کر سرکاری ملازم کو تکلیف پہنچانا)، سیکشن 504 (جان بوجھ کر امن خراب کرنے کی کوشش کرنا)، سیکشن 506 ( دہشت پھیلانا) اور سیکشن 427 (نقصان پہنچانا) کے تحت کیس درج کر گرفتار کیا ہے۔
اس واقعہ کے بعد ایم آئی ایم MLA امتیاز جلیل نے آج کہا کے مسلم ممبران اسمبلی کا ایک وفد جلد ہی وزیر اعلیٰ سے ملاقات کریگا اور فساد کے ویڈیو میں نظر آنے والے شیو سینا لیڈران کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا جائیگا۔ ساتھ ان پولس والوں کے خلاف کاروائی کا بھی مطالبہ کیا جائیگا جن کو فساد پھیلاتے ہوئے ویڈیو میں پایا گیا ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!