Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: تعلیمی اداروں میں بڑھتی فحاشی کے خلاف مولانا آزاد کالج میں ایس آئی او کا پروگرام

اورنگ آباد: کسی بھی قوم و ملک کا مستقبل اس کے تعلیمی اداروں کی چاردیواری میں طے ہوتاہے۔ آج دنیا سائنس و ٹیکنالوجی کی مدد سے جتنی زیادہ ترقی کی منازل طے کررہی ہے اخلاقی و روحانی اعتبار سے اتنی ہی تیزی سے پستی کی طرف جارہی ہے۔ یہ بات بھی ہمارے علم میں ہے کہ طلباء و نوجوان ہی کسی بھی ملک کا مستقبل بھی ہوتے ہیں اور اثاثہ بھی۔ یہی قوم کی ریڑھ کی ہڈی بھی مانے جاتے ہیں۔ آج کے اس مادہ پرستانہ اور فحاشی و عریانیت کے دور میں شیطان نوجوانوں کو بڑی تیزی سے مغربی تہذیب کی جانب ڈھکیلنے میں کامیاب ہورہاہے۔لیکن افسوس کی بات ہے کہ ہم اسے باعث فخر سمجھ رہے ہیں۔

معاشرے میں پھیلی یہ بے حیائ اب تک صرف بازاروں تھیٹروں اور مخصوص مقامات تک محدود تھی۔ لیکن افسوس کی بات ہے کہ اب یہ فحاشی تعلیمی اداروں تک پھیل چکی ہے۔
آج ضرورت اس بات کی ہے کہ طلباء و نوجوانوں کو اس فحاشی و عریانیت کے دلدل سے نکالا جائے۔ اور قرآن و حدیث کی روشنی میں انہیں زندگی جینے کا سلیقہ و طریقہ بتایا جائے۔ تاکہ آنے والی نسلیں مغربی تہذیب کے قبیہ اثرات سے محفوظ رہیں۔ اور اپنے اخلاق و کردار اور عمل سے اسلام کی صحیح تصویر دنیا کے سامنے پیش کریں۔

اسی ضرورت کو محسوس کرتے ہوئے ایس آیی او اورنگ آباد یونٹ نے بتاریخ 04 ستمبر بروز بدھ دوپہر 12:30 بجے شہر کے وسیع و عریض کیمپس اور اپنی مسلم شناخت رکھنے والا ادارہ مولانا آزاد کالج میں ایڈمنسٹریشن بلڈنگ کے روبرو ایک اہم پروگرام منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس اہم پروگرام میں معززین شہر مولانا معز الدین فاروقی صاحب (جامعہ کاشف العلوم) , انجینئر عبدالواجد قادری صاحب (ناظم شہر جماعت اسلامی ہند،اورنگ آباد) محترم سلمان احمد صاحب (صدر حلقہ ایس آئی او ساؤتھ مہاراشٹر) اور مظہر فاروقی صاحب(پرنسپل، مولانا آزاد کالج) طلباء سے خطاب فرمایں گے۔
اس اہم ترین موقع سے فائدہ اٹھانے کے لئے طلباء و نوجوانوں سے کثیر تعداد میں شرکت کی گذارش ایس آئی او اورنگ آباد کے صدر ناصر جوہری نے کی ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!