Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد:ضلع میں پانی کی شدید قلت، شہرمیں آنے والے پانی کے آلودہ ہونے کی شکایتیں

اورنگ آباد:۔ موسم باراں میں بارش کے منہ پھیر لینے کی وجہ سے ضلع اورنگ آباد میں پینے کے پانی کی شدید قلت واقع ہورہی ہے۔ جسکے چلتے مانسون کے عروج میں بھی انتظامیہ کو ضلع کے تقریباً 302گاؤں میں 321پانی کے ٹینکرس کے ذریعہ پانی مہیاء کروانا پڑ رہا ہے۔
سرکاری ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق انتظامیہ نے پچھلے ہفتہ جاری 260پانی ٹینکروں میں 61پانی کے ٹینکروں کا اضافہ کیا ہے۔موجود کیفیت کے مطابق گنگاپور تعلقہ کی ضلع میں سب سے بری حالت ہے جہاں پر 78پانی کے ٹینکروں کے ذریعہ 92گاؤں کو پانی مہیاء کروایا جارہا ہے۔اس کے علاوہ ویجاپور تعلقہ کے 58گاؤں میں 66ٹینکر، سلوڑ تعلقہ کے 31گاؤں میں 34ٹینکر، پھلمبری تعلقہ کے 25گاؤں میں 32ٹینکر اور خلدآباد کے 23گاؤں میں 27ٹینکروں کے ذریعہ پانی مہیا کروایا جارہا ہے۔ضلع کے اکثر ڈیم سوکھے پڑے ہوئے ہیں۔
ضلع میں پانی کی قلت کے علاوہ شہر میں میونسپل انتظامیہ کی جانب سے مہیاء کروائے جارہے پانی کے آلودہ ہونے کی بھی مختلف شکایتیں شہریان کی جانب سے آرہی ہیں جس میں خاص طور سے قدیم شہر کے علاقے شامل ہیں۔
قدیم شہر کے ساکنان نے الزام لگایا ہے کہ انکے علاقوں میں آنے والے پینے کے پانی میں نالے کا گندہ پانی مل کر آرہا ہے۔ کباڑی پورہ اور بڈی لین کے ساکنان نے بتایا کہ جب انہوں نے پچھلے ہفتہ گھروں میں پانی بھرنا شروع کیاتو انہیں اس میں کیڑے نظر آئے۔ محلہ کے ایک شہری سید ناصر نے اس گندے پانی کا ویڈیو بھی نکالا، ناصر نے کہا کہ اس سے متعلق ہم نے پانی مہیاء کروانے والے انجینیر سے رابطہ قائم کیا اور انہیں پانی میں کیڑوں کے آنے کی بات بتائی، لیکن انتظامیہ کی جانب سے اس پر کوئی قدم نہیں اٹھایا گیا۔
اسی علاقہ میں کچھ ساکنان نے بتایا کہ ان کے گھروں میں ہلکے پیلے رنگ کا پانی آرہاتھاجس سے عجیب سی بدبو بھی آرہی تھی۔ اس کے نتیجہ میں شہریان کو باہر سے پانی کے جار خریدنا یا ROسسٹم نصب کرنا پڑھ رہا ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!