Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباتا د پیٹھن راستے کا

لائیڈر آلہ کی مدد سے سروے کا کام جاری

اورنگ آباد (اے۔ای)پیٹھن تا اورنگ آباد ۵۵ کلو میٹر کے فاصلے والے اس روڈ کا سروے لائیڈر ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے نیشنل ہائے وے اتھاریٹی کی جانب سے کیاجارہا ہے ۔اس ٹیکنالوجی کے ذریعے ایک سیکنڈ میں دس لاکھ تصاویر نکالنے کی گنجائش ہونے کی بناء پر اس طرح کی ٹیکنالوجی کا استعمال اورنگ آباد میں پہلی مرتبہ ہورہا ہے ۔واضح ہوکہ حکومت کی جانب سے بھارت مالا پروجیکٹ میں اورنگ آباد ۔پیٹھن روڈ کی تعمیر کا منصوبہ تیار کرنے کے لئے ضروری راستے کا خاکہ تیار کیا جارہا ہے ۔اس راستہ کے خاکہ تیاری کام میں کسی بھی قسم کی غلطی نہ ہواس کے لئے انتظامیہ کی جانب سے لائیڈر ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جارہا ہے ۔جس کے آلہ کی قیمت دو کروڑ بتائی جارہی ہے اس طرح کی اطلاع نیشنل ہائے وے اتھاریٹی کے اشیش دیوکر نے دی ۔لائیڈر ٹیکنالوجی والے اس آلہ کے ذریعے کھڑک زمین اور عمارت کی جانچ کی جاسکتی ہے جس کے ذریعے چھوڑی جانے والی لیزر شعاعوں کی مدد سے تیزی ک ساتھ اور ہائی ریزولیوشن والی تصاویر کھینچی جاسکتی ہے ۔جس کی بناء پر اس آلہ کو تاریخی عمارتوں اور چٹانوں کا مطالعہ کرنے کیلئے استعمال کیا جاسکتا ہے ۔اسی طرح اس راستے کو چار پدر ی کیا جائیگا جس میں اورنگ آباد تا بڑکن تک سروس روڈ کی تعمیر ہوگی ،جبکہ بڑکن اور ڈھورکن کے پاس رِنگ روڈ تعمیر کیا جائیگا ۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!