Published From Aurangabad & Buldhana

الیکشن سے پہلے بنگلورو میں ملے 10 ہزار فرضی ووٹر کارڈز، الیکشن کمیشن نے دیا جانچ کا حکم

بنگلورو۔ الیکشن کمیشن نے بنگلورو کے ایک اپارٹمنٹ میں تقریبا دس ہزار فرضی ووٹر کارڈز کے پائے جانے کے واقعہ کی جانچ کے احکام دے دیئے ہیں ۔ یہ اپارٹمنٹ بنگلورو کے راجیشوری نگر حلقہ میں ہے ۔ کل شب میڈیا سے بات کرتے ہوئے کرناٹک کے الیکشن افسر سنجیوکمار نے کہا کہ دو پیٹی بھر ے ہوئے سلپس بھی پائے گئے۔

کمار نے اس واقعہ کے بعد اس اپارٹمنٹ کا دورہ کیا اور لیپ ٹاپس کے ساتھ ساتھ ایک پرنٹر بھی ضبط کرلیا۔ یہ فلیٹ رنگاراجو نامی شخص کو کرایہ پردیا گیا تھا جو ہر ماہ کرایہ ادا کر رہا تھا۔

الیکشن کمیشن نے بتایا کہ 9746 ووٹر آئی ڈی برآمد کئے گئے ہیں۔ جس گھر سے ووٹر آئی ڈی برآمد کئے گئے وہ منجلا ننجامری نام کے ایک لیڈر کا ہے جسے انہوں نے راکیش کمار نامی شخص کو کرایہ پر دیا تھا۔ اس واقعہ کے بعد کرناٹک کے الیکشن آفیسر سنجیو کمار نے ایک پریس کانفرنس کر کے اطلاع دی کہ شاید یہ کارڈ اس علاقے کی جھگی جھونپڑی میں رہنے والے لوگوں کے ہیں۔ ڈسٹرکٹ الیکشن آفیسر اور آبزرورکو اس معاملہ کی تحقیقات کی ذمہ داری سونپ دی گئی ہے۔

دیر رات ہوئے اس انکشاف سے کرناٹک میں ہنگامہ مچ گیا۔ کانگریس ترجمان رندیپ سرجیوالا نے نصف رات کو میڈیا سے خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے واضح طور پر کہا ہے کہ کانگریس رکن اسمبلی منجلا نے گھر اپنے بیٹے راکیش کو کرائے پر دیا تھا۔ راکیش نے بی جے پی کے ٹکٹ پر 2015 میں بنگلورو نگر پالیکا چناو میں بی جے پی کی ٹکٹ سے الیکشن لڑا تھا۔

سرجےوالا نے پریس کانفرنس میں ایک تصویر دکھاتے ہوئے کہا کہ اس فوٹو میں آپ دیکھ سکتے ہیں کہ بی جے پی کے رکن اسمبلی امیدوار منی راجا گوڑا بی جے پی لیڈر راکیش کے ساتھ نظر آ رہے ہیں۔ راکیش وہی ہیں جن کے گھر سے ووٹر آئی ڈی برآمد ہوئے ہیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!