Published From Aurangabad & Buldhana

الور میں پہلو خان کے بعد ایک اور قتل واقعہ، گایوں کی اسمگلنک کے شک میں پیٹ پیٹ کر اکبر کا قتل

راجستھان کے الور واقع رام گڑھ علاقہ میں ہفتہ کو موب لنچنگ کا ایک نیا معاملہ سامنے آیا ہے۔ یہاں گایوں کی اسمگلنگ کے شک میں بھیڑ نے ایک شخص کا پیٹ پیٹ کر قتل کر دیا ہے۔ اس معاملہ سے گزشتہ سال ہوئے پہلو خان کے قتل واقعہ کی یاد تازہ ہو گئی ہے۔

مقتول کی شناخت 50 سالہ اکبر خان کے طور پر ہوئی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ وہ ہریانہ میں واقع اپنے کول گاوں سے دو گائیں رام گڑھ کے لالونڈی لے کر جا رہے تھے تبھی نام نہاد گئو رکشکوں کی ایک ٹیم نے ان پر حملہ کر دیا۔ بھیڑ نے انہیں پیٹ پیٹ کر مار ڈالا۔ واقعہ کی اطلاع ملنے پر جائے واردات پر پہنچی پولیس نے لاش کو اپنے قبضہ میں لے کر سرکاری اسپتال بھیج دیا ہے اور معاملہ کی جانچ کر رہی ہے۔

پولیس نے واقعہ کی معلومات دیتے ہوئے بتایا کہ مقتول اکبربن سلیمان اپنے ساتھی کے ساتھ گایوں کو لے کر لال منڈی رام گڑھ سے پیدل جا رہے تھے۔ تبھی راستہ میں مبینہ گئو رکشکوں کے ساتھ گاوں والوں نے ان کی پٹائی کر دی۔ اس دوران اکبر کا ایک ساتھ بھاگ نکلا لیکن اکبر بھیڑ کے ہتھے چڑھ گئے۔ اطلاع ملنے کے بعد پولیس نے اکبر کو اسپتال میں بھرتی کرایا جہاں ان کی موت ہو گئی۔ فی الحال گاؤں میں پولیس فورس تعینات ہے اور موقع پر پولیس کے افسران بھی موجود ہیں۔ ابھی تک اس معاملہ میں کوئی گرفتاری نہیں ہوئی ہے۔

وہیں، راجستھان کی وزیر اعلیٰ وسندھرا راجے نے ٹویٹ کر اس واقعہ کی مذمت کی ہے۔ انہوں نے قصورواروں کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کرنے کا بھروسہ دلایا ہے۔

خیال رہے کہ موب لنچنگ پر الگ سے قانون بنائے جانے سے متعلق سپریم کورٹ کے حکمنامہ کے محض چار دن بعد لنچنگ کا یہ واقعہ پیش آیا ہے۔ سپریم کورٹ نے گئوركشا کے نام پر ہونے والے پرتشدد واقعات کی روک تھام کے لئے الگ سے قانون بنانے کی مرکزی حکومت کو ہدایت دی ہے۔

چیف جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی بنچ نے منگل کو گئوركشا کے نام پر تشدد کے بڑھتے واقعات پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ کوئی بھی شہری اپنے ہاتھ میں قانون نہیں لے سکتا۔ کورٹ نے خود ساختہ گئوركشكو ں کو روکنے اور متعلقہ واقعات کی روک تھام کے لئے کچھ ہدایات بھی جاری کئے اور ان پر عمل کرنے کے لئے چار ہفتے کا وقت دیا ہے۔

بتا دیں کہ پچھلے سال 50 سالہ پہلو خان کی بھی ان کے کنبہ کے دیگر ارکان کے ساتھ راجستھان کے الور میں قومی شاہراہ 8 پر نام نہاد گئو رکشکوں نے بری طرح پٹائی کر دی تھی۔ سنگین طور پر زخمی پہلو خان کو ضلع کے کیلاش اسپتال میں بھرتی کرایا گیا تھا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسے تھے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!