Published From Aurangabad & Buldhana

اللہ کے قانون میں قیامت تک ذرہ برابر بھی کوئی ترمیم نہیں کی جاسکتی۔مولانا یامین قاسمی

سلوڑ میں منعقدہ سیرت النبی ؐ کے تاریخ ساز اجلاس کا کامیاب اختتام

سلوڑ(دیشمکھ غلام حسین)اللہ کے قانون میں قیامت تک ذرہ برابر بھی کوئی ترمیم نہیں کرسکتا جب سے دُنیا بنی ہے تب سے تقریباً ایک لاکھ چوبیس ہزار انبیا کرام تشریف لائے جب ان انبیا کرام نے دین میں کوئی تبدیلی نہیں کی تو پھر یہ حکومتیں کیا اللہ کے قانون میں تبدیلی کرسکتی ہیں ۔طلاق جیسے ناپسندیدہ عمل پر بھی موصوف نے مثالوں کے ذریعے بات کی اور کہا کہ اسلام ہی وہ واحد مذہب ہے جس نے خواتین کوحقوق اور عفت دی ہے ۔ہندوستان میں اکیلے مسلمان ہی نہیں رہتا بلکہ دیگر قومیں بھی آباد ہیں اور آئین میں سبھی کو اپنے مذہب اپنے رسم ورواج کے مطابق زندگی گزارنے کاحق حاصل ہے لیکن خصوصی طور حکومت مسلمانوں کو نشانہ بنارہی ہے اُنھوں نے حکومت کو بھی اشاروں میں انتباہ دیا کہ اللہ کے قانون میں کو ئی ردوبدل کرنے کی کوشش نہ کریں ورنہ اللہ کاعذاب نازل ہوجائے گا۔مسلمان دنیا میں نفع بخشنے کیلئے پیدا کیا گیا ہے لیکن وہ اپنے اصل مقصد سے بھٹک گیا ہے مولانا نے طلاق جیسے ناپسندہ عمل سے پرہیز کرنے کی مسلمانوں کو تلقین کی فضول خرچی سے اپنے آپ کو بچانے کی بھی نصیحت کی ۔ مبلغ اسلام مولانا یامین قاسمی جمعیتہ علماء شاخ سلوڑ کی جانب سے پریہ درشنی چوک نیلم ہوٹل کے سامنے جمعرات ۱۱؍جنوری کو منعقدہ اجلاس میں صدارتی خطاب فرمارہے تھے ۔اس موقع پر جمعیت کے ریاستی صدر مولاناحافظ ندیم صدیقی نے کہاکہ نوجوان آپ ؐ کی سیرت کے مطابق اپنی زندگی بسر کریں خود بخود معاشرہ کی اصلاح ہوجائے گی مولانا نے عوام الناس خاص طورپر نوجوانوں کو غفلت کی زندگی سے باہر آنے کی تلقین ونصیحت کی مزید کہا کہ سیرت کے اجلاس روایتی نہ لیں بلکہ انہیں تحریکی رخ عطا کریں روکھی سوکھی کھاؤ لیکن اپنی اولادوں کو دینی اور عصری تعلیم دلواؤانہوں نے مسلم نوجوانوں کو کسی بھی قسم کے نشہ سے اپنے آپ کو دور رکھنے کی تلقین کی۔عظیم الشان اجلاس کے انعقاد پر مقامی جمعیت اور شہریان کی بھی مولاناحافظ ندیم نے پذیرائی کی۔اس سے قبل جلسہ کا آغاز قاری افروز نے تلاوت کلام پاک سے کیا نعت پاک قاری سعدبن اسلم اور معروف نعت خواں مفتی طارق جمیل نے مترنم آواز میں پیش کی ۔افتتاحی کلمات حافظ صادق نے پیش کئے انکے علاوہ مولانا معزالدین فاروق،مولانا حبیب الرحمن ،قاری شمش الحق نے بھی رہنمائی فرمائی۔مہمانان خصوصی میں عبدالرؤف انجینئر ،مولانانظام الدین ملی ،قرب وجوار کے علماء کرام کثیر تعداد میں موجود تھے انکے علاوہ رکن اسمبلی عبدالستار ،سابق صدر بلدیہ بنے خان پٹھان،صدر بلدیہ عبدالسمیر مختلف سیاسی جماعتوں کے ذمہ داران اور شہریان کثیر تعداد میں شریک تھے ۔اجلاس سے قبل فتح اسلام مسجد میں عصر تا مغرب مولانا یامین قاسمی اور حافظ ندیم صدیقی نے علما کرام اور جمعیتہ کے اراکین کی ایک نشست بھی لی ۔اس اجلاس کو کامیاب بنانے کے لئے مقامی سرپرست جمعیتہ علماء حافظ عبدالقادر ملی ،مولوی عارف ،صدر حافظ نذیر ،جنرل سیکریٹری دیشمکھ غلام حسین ،خازن حافظ نواب ،حاجی شیخ اسحا ق باغبان ، ایڈوکیٹ نسیم احمد ،ایڈوکیٹ شیخ عرفان ،ڈاکٹر شکیل ،ڈاکٹر فیروز ،حافظ اسماعیل قریشی ،حافظ الیاس ،مولانا انور ،حافظ خلیل ،مولانا ندیم ،حافظ سلطان،حافظ عبدالعظیم ،حافظ شہبازخالد ،حافظ عمر فاروق ،حافظ ابو طلحہ ،صحافی اعظم پٹھان،شیخ اقبال پاشاہ ،محسن باغبان ،ایاز پٹھان،شاہ رخ پٹھان،عقیل لال باڑے کرو دیگر نوجوانان سلوڑ نے کاوشیں کی ۔نطامت کے فرائض مفتی اظہر نے انجام دئے مولانا محمد علی قریشی کے اظہار تشکر اور مولانامحمد یامین کی دُعا پر اجلاس کااختتام عمل میں آیا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!