Published From Aurangabad & Buldhana

اسمارٹ سٹی : 1134 کروڑ کے کاموں کوSPVکی منظور ی

*سٹی بس سروس سے متعلق اندرون ایک ماہ ایس ٹی کارپوریشن کے ساتھ کیا جائے گا MOU *انڈپنڈنٹ ڈائریکٹر کی حیثیت سے ضمیر قادری، راجو ویدیہ اوراوتاڑے ایس پی وی میں شمولیت

اورنگ آباد (سینئر رپورٹر)اسمارٹ سٹی پروجیکٹ چیئرمن سنیل پوروال کی صدارت میں آج منعقدہ ایس پی وی (بورڈ آف ڈائریکٹرس ) کی میٹنگ میں اسمارٹ سٹی پروجیکٹ کے مختلف شعبہ جات سے متعلق مختلف کاموں ک و منظوری دے کر حکومت مہاراشٹر کو 1134 کروڑ پر مشتمل پرپوزل پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ چونکہ 15 ستمبر سے قبل کنورزن آف فنڈ کا معاملہ نمٹانا قانوناً لازمی تھا، اسلئے آج کی میٹنگ میں فنڈ ری لوکیز کا مسئلہ بھی حل کرلیا گیا۔ایس پی وی کی آج کی میٹنگ کے دوران ڈپٹی میئر وجئے اوتاڑے کو انڈیپنڈنٹ ڈائریکٹر، اپوزیشن لیڈر ضمیر قادری اور چیئرمن راجو ویدیہ کی بھی انڈیپنڈنٹ ڈائریکٹر کی حیثیت سے ایس پی وی میں شمولیت کی گئی ۔ علاوہ ازیں انجو اپل کو جوائنٹ چیف ، تھتے کو چیف فائنانس آفیسر اور پی کے کاڑسکر کو کمپنی سکریٹری کا حیثیت سے تقرر کرنے کو منظوری دی گئی ۔

چیئرمن سنیل پوروال کی صدارت میں ضلع کلکٹرادئے چودھری ، پولس کمشنر چرنجیوپرساد، میونسپل کمشنر ڈاکٹر نپون وینائک، میئر نندکمار گھوڑیلے، ڈپٹی میئر اوتاڑے ، چیئرمن راجو ویدیہ، ہاؤس لیڈر وکاس جین، اپوزیشن لیڈر ضمیر قادری بھی موجود تھے۔ ایس پی وی کی آج کی میٹنگ میں 120 کروڑ خرچ پر مشتمل ایم ایس آئی (ماسٹر سسٹم انٹیگریٹیڈ) ، کنورزن آف فنڈ کے ساتھ ساتھ سٹی بس سے متعلق اہم فیصلے کئے گئے ۔ حکومت کو پیش کئے جانے والے مذکورہ منظورشدہ پرپوزل میں اسمارٹ سٹی کے تحت ہیریٹیج کی خاطر 300 کروڑ ، واٹر سپلائی کیلئے 100 کروڑ، ویسٹ واٹر یوز 100 کروڑ، اسمارٹ روڈ 200 کروڑ، اسمارٹ ہاؤسنگ 200 کروڑ، اسمارٹ انوائرمنٹ 100 کروڑ، اسمارٹ روڈ 10 کروڑ، اسمارٹ روف واٹر ہارویسٹنگ1کروڑ، اسمارٹ ایجوکیشن 10 کروڑکے علاوہ اسمارٹ ہیلتھ کیلئے 10 کروڑ، اس طرح جملہ 1134 کروڑ خرچ پر مبنی پرپوزل حکومت کو پیش کیا جائے گا۔ حکومت مہاراشٹر کی معرفت یہ پرپوزل مرکزی حکومت کی منظوری کیلئے بھجوایا جائیگا۔اس تعلق سے تفصیلات بتلاتے ہوئے میئر گھوڑیلے نے کہا ٹاٹا موٹرس سے بسیں خریدنے کا ٹینڈر منظور ہو چکا ہے ۔

آئندہ دو ماہ کے دوران کمپنی کی جانب سے پہلے مرحلہ کے تحت 30 بسیں مہیا کروائی جائیں گی۔ ابتداء میں سٹی بس سروس ایس ٹی کارپوریشن کے ماتحت ہی چلائی جائے گی۔ سٹی بس کے ٹکٹ کا تعین کرنے ڈیویژنل کمشنر سے نمائندگی کی جا ئے گی۔ اندازاً 40 تا 50 روپئے فی کلو میٹر کے حساب سے سٹی بس سروس چلانے پر بھی گفتگو ہوئی۔

اسی طرح ای ٹکٹنگ کا طریقہ کار اختیار کیا جائے گا۔ ایس ٹی کارپوریشن کی معرفت سٹی بس سروس چلانے کے متعلق کہا گیا کہ ایس ٹی محکمہ کو گہرا تجربہ ہے۔ انفراسٹرکچر بھی دستیاب ہے اور سب سے اہم یہ کہ ایس ٹی کوڈیزل سبسیڈی ریٹ پر ملتا ہے۔ میئر گھوڑیلے نے اطلاع دی کہ سٹی بس سروس کے متعلق اندرون ایک ماہ ایس ٹی کارپوریشن اور میونسپل کارپوریشن کے درمیان MOU کیا جائے گا۔ میئر نے بتایا ایس پی وی کی میٹنگ میں میونسپل کمشنر کو سی او کی حیثیت سے مکمل اختیارات تفویض کئے گئے ۔
میئر گھوڑیلے نے مزید کہا گرین فیلڈ کے متعلق پوروال نے واضح کیا کہ اسمارٹ سٹی کے منظورشدہ اصل پرپوزل میں کس حد تک تبدیلی کا ہمیں اختیار ہے، اس کا مطالعہ کرنے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!