Published From Aurangabad & Buldhana

اترپردیش : لکھنو حج ہاوس کو بھگوا رنگ میں رنگنے کے معاملہ میں بیک فٹ پر یوگی سرکار ، اب ہوا پیلا

لکھنو : اترپردیش کی راجدھانی لکھنو میں واقع حج ہاوس کی باہری دیواروں کو بھگوا رنگ میں رنگنے کے معاملہ کو طول پکڑنے کے بعد اب ریاستی حکومت بیک فٹ پر آگئی ہے اور اس نے اس پر صفائی پیش کی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ حج ہاوس کا رنگ بھی بھگوا سے اب پیلا کردیا گیا ہے ۔ حکومت نے کہا ہے کہ حج ہاوس کی باہری دیواروں کو رنگنے کی ہدایت دی گئی تھی ، جانچ میں دیواروں کا رنگ گاڑھا ملا ہے ، جو ہدایت کے برعکس ہے ۔ اب حج ہاوس کی دیواروں کا رنگ بدلوایا گیا ہے ۔ اس معاملہ میں رنگائی کرنے والے ٹھیکہ دار کے خلاف کارروائی کا بھی حکم دیا گیا ہے۔
اقلیتی اور حج سے متعلق امور کی سکریٹری مونیکا گرگ نے کہا کہ معاملہ میں وضاحتی بیان جاری کیا گیا ہے ۔ ریاستی حج ہاوس کے حکم پر رنگنے کا کام کیا گیا تھا ۔ مونیکا گرگ کے مطابق رنگنے والے ٹھیکہ دار نے مطلوبہ رنگ کے برعکس گاڑھے رنگ کا استعمال کیا ، ہم اس میں یقینی طور پر تبدیلی کررہے ہیں ۔ ساتھ ہی ساتھ ٹھیکہ دار کے خلاف لاپروائی برتنے کیلئے کارروائی بھی کی جائے گی۔
قابل ذکر ہے کہ جمعہ کو لکھنو میں واقع حج ہاوس کی باہری دیواروں کو بھگوا رنگ میں رنگ دیا گیا تھا ۔ حج ہاوس کی باہری دیواروں پر لگے ہرے اور سفید رنگ کی جگہ کیسریا رنگ چڑھا دیا تھا ، جس پر اپوزیشن اور مسلم تنظیموں نے شدید اعتراض کیا تھا ۔ سیاسی پارٹیوں کا کہنا تھا کہ حکومت جان بوجھ کر ایک مخصوص مذہب کے جذبات کو بھڑکارہی ہے۔
خیال رہے کہ یوگی آدتیہ ناتھ کے وزیر اعلی بننے کے بعد سے ہی یوپی حکومت کیسریا رنگ پر کافی توجہ دے رہی ہے ۔ اسی سلسلہ میں سکریٹریٹ بلڈنگ کو بھی بھگوا رنگ میں رنگا گیا تھا ۔ یہاں تک کہ سرکاری پوسٹرس میں بھی بھگوا رنگ کا استعمال دیکھنے کو مل رہا ہے ۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!