Published From Aurangabad & Buldhana

آگرہ: آندھی ۔ طوفان میں 15 کی موت،تاج محل کی دو میناریں بھی منہدم

بدھ کی شام آئے تیز آندھی طوفان اورژالہ باری میں برج علاقے میں 15 لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔وہیں 24 سے زیادہ لوگ زخمی ہو گئے۔آندھی طوفان نے پوے منڈل میں جم کر تباہی مچائی۔بھیانک طوفان اور آندھی کااثر تاج محل پر بھی دیکھنے کو ملا۔تاج محل کے دو گلدستہ پلر منہدم ہو گئے۔بھیم نگری کا منچ بھی گر گیا۔شاہ گنج میں مسجد کی مینار بھی گری۔

رپورٹ کے مطابق اس بھیانک آندھی ۔طوفان میں قریب 35 ملی میٹر بارش ہوئی اور 40 منٹ تک ژالہ باری ہوتی رہی۔اس طوفان سے شہر سے لیکر 6 دیہات تک سڑکوں پر درخت،ہورڈنگ ،ٹین شیڈ ،کھمبےاڑ گئے۔کئی مکان اور دیواریں بھی منہدم ہو گئیں۔آگرہ آٹھ ،متھرا میں چار اور فیروزہ آباد میں لوگوں کی موت ہو گئی۔

محبت کی امر نشانی تاج محل کے دو گیٹوں کی میاناریں گرنے کے ساتھ اہم یادگار کو بھی نقصان پہنچا ہے۔طوفان میں دو درج سے زائد لوگ زخمی ہوئے ہیں۔بونڈر میں کروڑوں روپئے کے نقصان کی بھی خبر ہے۔وہیں کئی علاقےپانی میں ڈوب گئے ہیں۔گیہوں کی 80فیصدی تک فصل برباد ہو گئی ہے۔

واضح ہو کہ آگرہ منڈل میں شام 7:30 بجے طوفان اتنا تیز تھ اکہ چند لمحوں میں تباہی مچ گئی۔لوگ سنبھال پاتے تب تک ژالہ باری اور بھاری بارش ہونے لگی۔چند منٹ میں ہی یہ طوفانی کہرام پورے برج میں پھیل گیا۔

بتا دیں کہ یوپی کے موسم میں آئی تبدیلی اور آندھی ۔طوفان کا قہر دیکھنے ملا۔آندھی۔طوفان سے صوبے میں اب تک 35 سے زائد لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔رونیو ڈپارٹمنٹ کی ہدایات پر آندھی۔طوفان سے ہوئے نقصان کا تخمینہ کیا جا رہا ہے ۔آندھی۔طوفان سے متاثر لوگوں کو حکومت نے ایمرجنسی مدد مہیہ کرانے کی ہدایات دی ہیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!