Published From Aurangabad & Buldhana

آئی پی ایل 2020: دہلی کیپٹلس کا شاندار کار کردگی کا سلسلہ جاری، راجستھان رائلس کو 13 رنوں سے دی شکست

دبئی : راجستھان رائلز کی قسمت آج ایک بار پھر خراب رہی جب بہترین شروعات ملنے کے باوجود دہلی کیپٹلز کے ذریعہ جیت کے لیے دیے گئے162 رنوں کا ہدف حاصل نہیں کر سکی۔ بین اسٹوکس اور جوس بٹلر نے 3 اوور میں 37 رنوں کی تیز شروعات دی تھی اور درمیان میں سنجو سیمسن اور اتھپّا نے بھی تیزی سے رن بٹورے، لیکن بقیہ کسی بھی بلے باز نے اچھی کارکردگی نہیں دکھائی۔ آخر کے 2 اوور میں جیت کے لیے راجستھان کو 25 رن چاہیے تھے اور 4 وکٹ ہاتھ میں تھے۔ لیکن محض 12 رن ہی بن سکے اور 2 مزید وکٹ بھی گر گئے۔ اسمتھ کی ٹیم 20 اوور میں 8 وکٹ کے نقصان پر 148 رن بنا سکی اور 13 رنوں سے شکست ہاتھ لگی۔


دہلی کیپٹلز کے کپتان شریئس ایر نے آج ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا تھا۔ اس کی شروعات بہت خراب رہی کیونکہ پہلی ہی گیند پر جوفرا آرچر نے پرتھوی شاء کو بولڈ کر دیا۔ پھر اجنکیا رہانے بھی محض 2 رن بنا کر آرچر کے ہی شکار ہو گئے۔ دہلی 2.3 اوور میں 10 رن پر ہی اپنے دو اہم وکٹ گنوا چکی تھی۔ لیکن اس کے بعد سلامی بلے باز شکھر دھون اور کپتان شریئس ایر نے نہ صرف میدان میں جم کر کھیلا، بلکہ خراب گیندوں پر باؤنڈری بھی لگائی۔ خصوصی طور پر شکھر دھون نے تیز اننگ کھیلی اور 2 چھکوں و 6 چوکوں کی مدد سے 33 گیندوں پر 57 رن پر شریئس گوپال کو وکٹ دے بیٹھے۔ دونوں کے درمیان 85 رنوں کی شراکت داری ہوئی۔

سولہویں اوور میں جب ٹیم کا اسکور 4 وکٹ پر 132 رن تھا تو کپتان شریئس ایر رنوں کی رفتار بڑھانے کی کوشش میں 43 گیندوں پر 53 رن بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ انھوں نے 2 چھکے اور تین چوکے لگائے۔ اس کے بعد وکٹ گرنے کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ اسٹوئنس اور ایلیکس کیری کے درمیان ایک چھوٹی لیکن اہم شراکت داری ہوئی۔ اسٹوئنس 19 گیندوں پر 18 رن بنا کر اور کیری 13 گیندوں پر 14 رن بنا کر پویلین لوٹے۔ اکشر پٹیل ساتویں وکٹ کی شکل میں 20ویں اوور کی آخری گیند پر آؤٹ ہوئے جنھوں نے 4 گیندوں پر 7 رن کا تعاون دیا۔ آر اشون بغیر کوئی رن بنائے ناٹ آؤٹ واپس ہوئے۔ مقررہ 20 اوور میں دہلی نے 161 رن بنائے اور راجستھان کے سامنے جیت کے لیے 162 رنوں کا ہدف رکھا۔

راجستھان کی جانب سے گیندبازی میں جوفرا آرچر سب سے کامیاب ثابت ہوئے جنھوں نے 4 اوور میں محض 19 رن دے کر 3 اہم وکٹ لیے۔ 2 وکٹ جے دیو انادکٹ کو حاصل ہوئے جنھوں نے 3 اوور میں 32 رن خرچ کر دیے۔ 1-1 وکٹ کارتک تیاگی اور شریئس گوپال کو ملا جنھوں نے 4-4 اوور میں بالترتیب 30 اور 31 رن دیے۔ بین اسٹوکس نے 2 اوور میں 24 رن دیے اور راہل تیواتیا نے 3 اوور میں 23 رن دیے، ان دونوں کو ہی کوئی وکٹ نہیں ملا۔

راجستھان کے سلامی بلے باز جب 162 رنوں کے ہدف کا پیچھا کرنے میدان میں اترے تو تیز شروعات دینے کی کوشش کی اور 3 اوور میں 37 رن بھی بنا دیے، لیکن تیسرے اوور کی آخری گیند پر جوس بٹلر 9 گیندوں پر تیز طرار 22 رن بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ اس کے بعد کپتان اسٹیوین اسمتھ محض 1 رن کے انفرادی اسکور پر اشون کی گیند پر انہی کو کیچ دے بیٹھے۔ دوسرے سلامی بلے باز بین اسٹوکس تیزی کے ساتھ رن بناتے رہے اور وہ تیسرے وکٹ کی شکل میں 11ویں اوور کی دوسری گیند پر آؤٹ ہوئے۔ اس وقت تک وہ 35 گیندوں میں 41 رن بنا چکے تھے اور ٹیم کا مجموعی اسکور 86 رن تھا۔

سنجو سیمسن اور اتھپا نے اس موقع پر چھوٹی چھوٹی لیکن بہت اہم پاریاں کھیلیں۔ سیمسن 18 گیندوں پر 25 رن بنا کر پویلین لوٹے اور اتھپّا 27 گیندوں پر 32 رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔ ریان پراگ خوش قسمت نہیں رہے کیونکہ وہ 1 رن بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔ 17.3 اوور میں راجستھان کا مجموعی اسکور 6 وکٹ کے نقصان پر 135 رن تھا اور میچ دلچسپ مرحلے میں داخل ہو گیا تھا۔ سارا دارومدار راہل تیواتیا اور جوفرا آرچر کے کندھے پر آ گیا تھا، لیکن آرچر بھی انیسویں اوور کی چوتھی گیند پر محض 1 رن بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ انیسواں اوور رباڈا نے کیا جنھوں نے اس اوور میں محض 4 رن دیے۔ آخری اوور میں راجستھان کو جیت کے لیے 22 رن بنانے تھے جو مشکل تھے۔ آخری اوور تشار دیش پانڈے نے کیا جنھوں نے شاندار گیندبازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے صرف 8 رن دیے اور آخری گیند پر ایک وکٹ بھی حاصل کر لیا۔ آؤٹ ہونے والے بلے باز شریئس گوپال تھے جنھوں نے 4 گیندوں پر 6 رن بنائے۔ راہل تیواتیا سے لوگوں کو کافی امیدیں تھیں لیکن وہ 18 گیندوں پر محض 14 رن بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

دہلی کی طرف سے گیندبازی میں آر اشون نے بہت کفایتی گیندبازی کی جنھوں نے 4 اوور میں محض 17 رن دے کر 1 وکٹ حاصل کیا۔ رباڈا نے 4 اوور میں 28 رن اور اکشر پٹیل نے 4 اوور میں 32 رن دے کر 1-1 وکٹ حاصل کیا۔ نارخیا نے 4 اوور میں 32 رن دے کر 2 وکٹ لیے، جب کہ 4 اوور تشار دیشپانڈے کو ملے جنھوں نے 37 رن دے کر 2 وکٹ حاصل کیے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!