Published From Aurangabad & Buldhana

آئی پی ایل کھیلنے والے کھلاڑیوں کو کورونا ٹیسٹ کروانا ضروری

نئی دہلی : متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں 19 ستمبر سے 10 نومبر تک ہونے والے آئی پی ایل کے 13ویں سیزن میں کھلاڑیوں اور عملے کوسخت جانچ کے عمل سے گزرنا ہوگا۔ انہیں یو اے ای میں مشق شروع کرنے سے قبل کم از کم چار ٹیسٹ پاس کرنے ہوں گے اور ایک ہفتہ کوارنٹائن ہونا ہوگا۔

آئی پی ایل نے جانچ اور معیاری آپریٹنگ طریقہ کار (ایس او پی) کے عمل کا ڈرافٹ دستاویز فرنچائزی ٹیموں کے ساتھ شیئر کیا ہے ۔ایس او پی میں بتایا گیا ہے کہ 53 دن کے اس ٹورنامینٹ کے دوران سفر، قیام اور ٹریننگ کے لئے کیا کرنا ہوگا اور کیانہیں کرناہوگا۔ اس ٹورنامینٹ کے میچ دبئی، ابو ظہبی اور شارجہ میں کھیلے جائیں گے۔ بی سی سی آئی نے ابھی ٹورنامنٹ شیڈول کا اعلان نہیں کیا ہے اور اسے یو اے ای میں ٹورنامنٹ کے انعقاد کے لئے حکومت ہند سے باضابطہ منظوری کا انتظار ہے۔

ایسا سمجھا جاتا ہے کہ ٹیموں کو کم سے کم عملے کے ساتھ سفر کرنے کو کہا گیا ہے اور وہ 20 اگست کے بعد ہی سفر کرسکتی ہیں۔ ایس او پی میں آئی پی ایل نے ٹیم کے ممبروں کے اہل خانہ کو متحدہ عرب امارات جانے کی اجازت دے دی ہے لیکن انہیں حیاتیاتی حفاظتی ماحول میں رہنا ہوگا حالانکہ اس معاملے میں حتمی فیصلہ ہر فرنچائزی کا ہوگا۔ آئی پی ایل نے یہ ضروری کردیا ہے کہ ہر ٹیم کے ساتھ ایک ڈاکٹرہونا چاہئے تاکہ خطرے کوکم رکھنے میں فرنچائزی کومدد مل سکے اوروہ کوروناکے تیئں ٹیم کو آگاہ رکھ سکے۔

یو این آئی

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!